تازہ ترین
ہوم / پاکستان / متنازعہ ویڈیو سامنے آنے کے بعد وزیراعظم کی جہانگیر ترین، گورنر چوہدری سرور اور وزیراعلیٰ سے ملاقات، بڑا فیصلہ کرلیا

متنازعہ ویڈیو سامنے آنے کے بعد وزیراعظم کی جہانگیر ترین، گورنر چوہدری سرور اور وزیراعلیٰ سے ملاقات، بڑا فیصلہ کرلیا

لاہور (نیوز ڈیسک) متنازعہ ویڈیو منظر عام پر آنے کے بعد وزیراعظم کی جہانگیر ترین، گورنر اور وزیراعلی پنجاب سے ملاقات، ملاقات کے دوران تحریک انصاف کے ناراض اراکین اسمبلی اور اتحادیوں کے تحفظات سے متعلق تبادلہ خیال کیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے جہانگیرترین اور پرویز الٰہی کی گفتگو کا نوٹس لینے کے بعد ہنگامی ملاقات کی گئی ہے۔وزیراعظم عمران خان نے جہانگیرترین اور پرویز الٰہی کی گفتگو کی خفیہ ویڈیو لیک ہونے کے بعد اہم ملاقات کی ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے تحریک انصاف کے رہنما جہانگیر ترین، وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار اور گورنر پنجاب چوہدری سرور سے ملاقات کی ہے۔ ملاقات کے دوران چاروں رہنماوں

نے پنجاب کی موجودہ سیاسی صورتحال پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا۔اس دوران تحریک انصاف کے ناراض اراکین اسمبلی اور اتحادیوں کے تحفظات سے متعلق بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔ وزیراعظم عمران خان نے جہانگیر ترین، وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار اور گورنر پنجاب چوہدری سرور کو پارٹی رہنماوں اور اتحادی جماعتوں کے تحفظات دور کرنے کی ہدایت کی ہے۔ دوسری جانب ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیراعظم نے لاہور میں قیام بڑھانے پر غورشروع کردیا ہے۔امکان ہے کہ وزیراعظم عمران خان مزید کچھ روز تک لاہور میں قیام کریں گے۔ لاہور میں اپنے قیام کے دوران وزیراعظم عمران خان اتحادی جماعت کے تحفظات کو دور کرنے کی کوشش کریں گے۔ واضح رہے اسپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویز الٰہی اور پی ٹی آئی کے سینئر رہنماء جہانگیر ترین کے درمیان ملاقات کی ریکارڈنگ فوٹیج سامنے آئی ہے۔ ملاقات میں طارق بشیر چیمہ بھی موجود تھے، چودھری پرویز الٰہی نے جہانگیر ترین سے کہا کہ ’’یار اس سرور نوں کنٹرول کرو‘‘ جس پر طارق بشیر چیمہ نے کہا کہ آپ کے چیف منسٹر کو اس نے چلنے نہیں دینا۔ملاقات میں حمزہ شہباز سے متعلق بھی اظہار خیال کیا گیا جس میں حمزہ شہباز کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا۔ انہوں نے کہا کہ حمزہ شہباز عمران خان سے زیادہ مجھ پر تنقیدی حملے کرتے ہیں۔ پہلے رانا ثناءاللہ تھے اب حمزہ شہباز تنقید کررہے ہیں۔ ملاقات میں سینیٹ الیکشن میں درپیش چیلنجز پر بھی غور کیا گیا۔مسلم لیگ ق کی قیادت نے جہانگیرترین سے شکوہ کیا کہ اراکین صوبائی اسمبلی کے تحفظات بڑھ رہے ہیں۔اراکین اسمبلی کوترقیاتی فنڈ نہیں دیے جارہے ہیں ۔جس پر ارکان اسمبلی پریشان ہیں۔اراکین کے تحفظات دور نہ ہوئے سینیٹ الیکشن مشکل ہوگا۔ انہوں نے مزید کہا کہ آرائیں فیکٹر الیکشن پر اثر انداز ہوگا۔انہوں نے

کہا کہ ارکان کے شکوے دور نہ ہوئے تونقصان ہوگا۔ پی ٹی آئی کے ارکان بھی شکوے کررہے ہیں۔عثمان بزدار کو کامیاب بنانا ہے توان کواختیار ات بھی دینے ہوں گے۔صوبائی ارکان کے حلقوں کے کام نہیں ہورہے ہیں۔ مزید برآں اسپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویزالٰہی سے پاکستان تحریک انصاف کے سینئر رہنما جہانگیر خان ترین نے یہاں ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کی۔ اس موقع پر وفاقی وزیر ہاؤسنگ طارق بشیر چیمہ اور صوبائی وزیر معدنیات حافظ عمار یاسر بھی موجود تھے۔ دونوں رہنماؤں کے درمیان موجودہ ملکی سیاسی صورتحالی اور سینیٹ میں پنجاب کی دو سیٹوں پر الیکشن کے حوالے سے حکمت عملی پر تبادلہ خیال کیا گیا۔چودھری پرویزالٰہی نے کہا کہ عمران خان پاکستان کو مشکل حالات سے نکالنے کیلئے بڑی محنت کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مجھے یقین ہے کہ پاکستان جلد قرضوں سے نجات حاصل کر کے خوشحالی کی منزلیں طے کر لے گا، پاکستان کی خوشحالی کے سفر میں ہماری جماعت تحریک انصاف کے ساتھ ہر محاذ پر کھڑی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *