تازہ ترین
ہوم / پاکستان / گھر بیٹھے بیرون ملک پارسل بھیجیں ، 72گھنٹوں میں ڈلیوری کی گارنٹی، پاکستان پوسٹ نےبہترین سروس کا آغاز کردیا

گھر بیٹھے بیرون ملک پارسل بھیجیں ، 72گھنٹوں میں ڈلیوری کی گارنٹی، پاکستان پوسٹ نےبہترین سروس کا آغاز کردیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) پاکستان پوسٹ نے بیرون ملک سامان بھجوانے کے لیے ایکسپورٹ پارسل سروس کا آغاز کر دیا۔وفاقی وزیر مواصلات وپوسٹل سروس مراد سعید نے ای ایم ایس پلس کا افتتاح کر دیا ہے جس کے تحت کسی بھی شہر سے پارسل اُسی روز ائیرپورٹ سے باہر نکل جائے گا۔ابتدائی طور پر فیصل آباد،سایلکوٹ اور لاہور میں سروش شروع کی جائے گی۔اسی حوالے سے وفاقی وزیر مواصلات کا پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہنا تھا کہ پاکستان پوسٹ خسارے میں تھا اب اپنے وسائل سے پروجیکٹ شروع کر رہا ہے۔ اداروں کو خسارے سے نکال کر منافع بخش بنانا چاہتے ہیں۔پاکستان پوسٹ بھی خسارے میں جانے والے اداروں میں شامل ہے۔مراد سعید نے کہا کہ پاکستان پوسٹ نے

بیرون ملک سامان بھجوانے کے لیے ایکسپورٹ پارسل سروس کا آغاز کر دیا ہے۔اب اگر کسی نے بھی بیرون ملک پارسل بھیجنا ہو تو اسے یہ سہولت گھر بیٹھے ملے گی۔پاکستان پوسٹ 72 گھنٹوں میں ڈلیوری کی گارنٹی دے گا۔اب لوگوں کا کچھ دنوں میں پارسل ایک دن میں پہنچایا جائے گا۔مراد سعید کا مزید کہنا تھا کہ چھوٹے تاجروں سے گلوبل پارسل سروس کے انتہائی کم چارجز وصول کیے جائیں گے۔پرائیویٹ کورئیر سے 175 فیصد سستا پارسل دنیا بھر میں بھیجا جا سکتا ہے۔خیال رہے گذشتہ ماہ وفاقی وزیر پوسٹل سروسز مراد سعید نے موبائل ایپ ’نیا ڈیجیٹل پاکستان پوسٹ‘کا اجراء کرتے ہوئے کہا تھا کہ جدید مسابقتی دور میں پاکستان پوسٹ اب کسی سے پیچھے نہیں رہیگا، پاکستان پوسٹ پورے ملک میں ایکسپورٹ پارسل کے میدان میں داخل ہو جائے گا، لاجسٹک کے شعبہ کی مارکیٹ میں بھی محکمہ ڈاک اپنا مقام پیدا کریگا جس کا آغاز 23 جنوری سے کر دیا جائیگا ،23 مارچ تک پورا پاکستان پوسٹ اپ گریڈ نظر آئیگا، صارفین کی شکایات کی خود نگرانی کروں گا ان کا اعتماد ہمارے لئے اثاثہ ہو گا، ماضی میں ادارے کو نظر انداز کرنے کے باعث یہ جدید مسابقتی دور کے تقاضوں سے عہدہ برآ نہیں ہوسکا،موبائل اپیلی کیشن سے پاکستان پوسٹ کی تمام معلومات صارف کی جیب میں ہونگی،جلد سی پیک کے ذریعے ہونیوالی تجارت میں لاجسٹک سروس کا بھی آغاز کیا جائیگا جس سے پاکستان پوسٹ کو فائدہ ہو گا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *