تازہ ترین
ہوم / پاکستان / تعلیمی اداروں میں خواجہ سراء خواتین کے نشہ فراہم کرنے کا انکشاف، اینٹی نارکوٹکس فورس کاتعلیمی اداروں کے اطراف آپریشن، گرفتاریاں کرلیں

تعلیمی اداروں میں خواجہ سراء خواتین کے نشہ فراہم کرنے کا انکشاف، اینٹی نارکوٹکس فورس کاتعلیمی اداروں کے اطراف آپریشن، گرفتاریاں کرلیں

لاہور(نیوز ڈیسک) ملک میں تعلیمی اداروں میں خواجہ سراء خواتین کے نشہ فراہم کرنے کا انکشاف ہوا ہے، اینٹی نارکوٹکس فورس نے تعلیمی اداروں کے اطراف آپریشن تیز کردیا، ایک تعلیمی ادارے کے باہرخواجہ سراء کوگرفتارکرلیاہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق تعلیمی اداروں میں منشیات فروشی میں خواجہ سراؤں کے ملوث ہونے کا انکشاف ہوا ہے۔منشیات اسمگلرزنے تعلیمی اداروں میں نشے کی سپلائی کیلئے خواجہ سراء خواتین کواستعمال کرنا شروع کردیا ہے۔اینٹی نارکوٹکس فورس نے تعلیمی اداروں کے اطراف کریک ڈاؤن شروع کردیا ہے۔کریک ڈاؤن لاہور، راولپنڈی ، فیصل آباد اور گوجرانوالہ میں کیا گیا۔کریک ڈاؤن کے دوران کچھ خواجہ سراء خواتین کوگرفتار بھی کیا گیا

ہے۔دوسری جانب پنجاب حکومت نے بھی طالبعلموں کو نشہ سے محفوظ رکھنے کیلئے خصوصی اقدامات کا فیصلہ کیا ہے۔اس حوالے سے تعلیمی اداروں کو نشہ آور اشیاء سے پاک رکھنے کیلئے خصوصی مہم چلائی جائے گی جبکہ حکومت نے ایجوکیشنل انسٹیٹیوشنز میں منشیات کے مکمل انسداد کو یقینی بنانے کیلئے خصوصی کمیٹی بھی تشکیل دے دی ہے۔ یہ بات صوبائی وزیرتعلیم پنجاب مراد راس نے پنجاب کریکولم اینڈ ٹیکسٹ بک بورڈ آفس میں پرائیویٹ سکولز مالکان کے ایک اہم اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے بتائی۔اجلاس میں پرائیویٹ سکول مالکان اور متعلقہ محکموں کے افسران نے شرکت کی۔اجلاس میں تعلیمی اداروں میں نشہ آور اشیاء کے مکمل تدارک کے حوالے سے مختلف تجاویز پر تبادلہ خیال کیا گیا۔اس موقع پر نجی و سرکاری تعلیمی اداروں میں نشہ آور اشیاء کی روک تھام کے حوالے سے آگاہی مہم چلانے پربھی اتفاق کیا گیا۔صوبائی وزیر مراد راس نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ طالبعلموں کو نشے سے محفوظ رکھنے کیلئے ان کی ضروری رہنمائی اور والدین کو آن بورڈ رکھنے کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہا ہے کہ اساتذہ اور والدین بچوں کونشے کی لعنت سے بچائو کیلئے اپنا کردار ادا کریں۔اس حوالے سے سکول کونسلز کا کردارانتہائی اہم ہے۔انہوں نے بتا یا کہ محکمہ سکولز ایجوکیشن تعلیمی اداروں کی مسلسل مانیٹرنگ کرئے گا تا کہ طالبعلموں کو صحت مند ماحول ملے اور وہ کسی نشے کا شکار نہ ہوں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *