تازہ ترین
ہوم / پاکستان / علیم خان بھی چھپے رستم نکلے، لندن کے مہنگے ترین علاقے میں متعدد اپارٹمنٹس کا انکشاف، اپارٹمنٹس کی مالیت جان کر آپ ششدر رہ جائینگے

علیم خان بھی چھپے رستم نکلے، لندن کے مہنگے ترین علاقے میں متعدد اپارٹمنٹس کا انکشاف، اپارٹمنٹس کی مالیت جان کر آپ ششدر رہ جائینگے

لاہور (نیوز ڈیسک) نیب کی جانب سے گرفتار کیے گئے پاکستان تحریک انصاف کےسینئررہنما اور پنجاب کے سابق سینئرصوبائی وزیر علیم خان کے لندن میں مہنگے علاقوں میں 4 اپارٹمنٹس کا انکشاف ہوا ہے۔میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ نیب میں دوران تفتیش علیم خان سے ان کی لندن میں جائیداد کے بارے میں پوچھا گیا اور یہ بھی پوچھا گیا کہ ان کے پاس یہ جائیداد خریدنے کے لیے پیسہ کہاں سے آیا؟۔نیب کے تفتیشی افسر نے علیم خان سے 2005 ء میں بنائی گئی آف شور کمپنی کی دستاویزات بھی مانگ لیں جب کہ رقم منتقل کرنے کے بارے میں بھی پوچھا گیا۔واضح رہے سابق سینئر صوبائی وزیر اور پی ٹی آئی رہنماءعلیم خان کو نیب نے دو روز قبل پیشی کے دوران گرفتار کرلیا تھا۔

جس کے بعد علیم خان نے وزارت سے استعفیٰ دے دیا تھا جسے منظور بھی کر لیا گیا ہے۔ نیب لاہور کی جانب سے جاری گرفتاری کی وجوہات کے مطابق عبدالعلیم خان کی جانب سے مبینہ طور پر پارک ویو کوآپریٹو ہائوسنگ سوسائٹی کے بطور سیکرٹری اور ممبر صوبائی اسمبلی کے طور پر اختیارات کا ناجائز استعمال کیا جس کی بدولت پاکستان و بیرون ممالک میں مبینہ طور پر آمدن سے زائد اثاثہ جات بنائے ۔ملزم عبدالعلیم خان نے ریئل اسٹیٹ بزنس کا آغاز کرتے ہوئے کروڑوں روپے مذکورہ بزنس میں انویسٹ کیے ، علاوہ ازیں ملزم کی جانب سے لاہور اور مضافات میں اپنی کمپنی میسرز اے اینڈ اے پرائیویٹ لمیٹڈ کے نام مبینہ طور پر 900کنال زمین خریدی جبکہ 600کنال مزید زمین کی خریداری کیلئے بیانہ رقم بھی ادا کی گئی تاہم ملزم عبدالعلیم خان مذکورہ زمین کی خریداری کیلئے موجودہ وسائل کے حوالے سے تسلی بخش جواب دینے سے قاصر رہے ۔ملزم عبدالعلیم خان نے مبینہ طور پر ملک میں موجود اثاثہ جات کے علاوہ 2005اور 2006ء کے دوران متحدہ عرب امارات اور برطانیہ میں متعدد آف شور کمپنیاں بھی قائم کیں جن میں ملزم کے نام موجودہ اثاثہ جات سے کہیں زیادہ اثاثے خریدے گئے جن کے حوالے سے نیب افسران تحقیقات جاری رکھے ہوئے ہیں تاہم ملزم کی جانب سے ریکارڈ میں مبینہ ردو بدل کے پیش نظر ملزم کی گرفتاری عمل میں لائی گئی ہے تاہم دوران گرفتاری ملزم کے اپنے اور دیگر بے نامی اثاثہ جات کے حوالے سے قانون کے مطابق تحقیقات رکھی جائیں گی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *