تازہ ترین
ہوم / پاکستان / ڈاکٹر عاصم کے ہسپتال میں دہشت گردوں کا علاج ہوتا رہا، جانتے ہیں دہشتگردوں کا علاج کس کے کہنے کیا گیا، جے آئی ٹی رپورٹ میں سنسنی خیز انکشافات

ڈاکٹر عاصم کے ہسپتال میں دہشت گردوں کا علاج ہوتا رہا، جانتے ہیں دہشتگردوں کا علاج کس کے کہنے کیا گیا، جے آئی ٹی رپورٹ میں سنسنی خیز انکشافات

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک)ڈاکٹر عاصم کے ہسپتال میں دہشت گردوں کے علاج سے متعلق کیس کی تحقیقاتی رپورٹ عدالت میں پیش کر دی گئی۔ جے آئی ٹی رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ سابق صدر آصف علی زرداری کے قریبی ساتھی ڈاکٹر عاصم کے ہسپتال میں دہشت گردوں کا علاج کیا جاتا رہا ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ دہشت گردوں کا علاج فریال تالپور، قادر پٹیل، ثانیہ بلوچ اور وسیم اختر کے کہنے پر کیا گیا اور جن دہشت گردوں کا علاج کیا گیا ان کا تعلق لیاری گینگ وار، ایم کیو ایم اور القاعدہ سے تھا۔رینجرز پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ ڈاکٹر عاصم کے ہسپتال میں دہشت گردوں کا علاج فریال تالپور، قادر پٹیل، ثانیہ بلوچ اور وسیم اختر کے کہنے پر کیا جاتا رہا ہے۔اس حوالے سے رؤف صدیقی، انیس قائم خانی اور

ڈاکٹر عاصم کوعدالت میں پیش بھی کیا گیا۔ یاد رہے کہ ڈاکٹر عاصم پر اپنے ہسپتال میں دہشت گردوں کا علاج کرنے کے حوالے سے کیس چل رہا ہے جس کے حوالے سے وہ پہلے ہی اعتراف کر چکے ہیں کہ انہوں نے ان لوگوں کا علاج کیا تھا جنہیں اب دہشت گرد قرار دیا گیا ہے لیکن وہ نہیں جانتے تھے کہ وہ دہشت گرد ہیں اور اگر وہ جانتے بھی ہوتے تب بھی انہوں نے ڈاکٹر کے طور پر حلف اٹھا رکھا ہے کہ وہ کسی بھی بیمار کا علاج بغیر کسی تعصب اور کوئی تمیز کیے کریں گے اس لیے انہوں نے متذکرہ لوگوں کا علاج کیا تاہم وہ نہیں جانتے تھے کہ انکا تعلق دہشت گردوں سے ہے البتہ اب جے آئی ٹی رپورٹ میں عدالت کو بتایا گیا ہے کہ ان دہشت گردوں کا علاج فریال تالپور، قادر پٹیل، ثانیہ بلوچ اور وسیم اختر کے کہنے پر کیا گیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *