تازہ ترین
ہوم / صحت و تعلیم / کراچی کے ڈاکٹر خون کی ہولی کھیلنے لگے،یرقان میں مبتلا3سالہ بچے کو غلط گروپ کا خون لگادیا، بچہ جاں بحق

کراچی کے ڈاکٹر خون کی ہولی کھیلنے لگے،یرقان میں مبتلا3سالہ بچے کو غلط گروپ کا خون لگادیا، بچہ جاں بحق

کراچی(نیوز ڈیسک)کراچی کے علاقے ملیر میں 3سالہ بچے کو ڈاکٹرز نے غلط گروپ کا خون لگا دیا۔ 3سالہ بچے کو یرقان میں مبتلا ہونے کی وجہ سے نجی ہسپتال میں لایا گیا جہاں ڈاکٹرز نے بچے کو غلط گروپ کا خون لگا دیا جس سے بچے کی حالت خراب ہونا شروع ہو گئی۔ بچے کے والدین اسے لے کر مختلف ہسپتالوں میں جاتے رہے لیکن تمام ہسپتالوں نے بچے کا علاج کرنے سے انکار کر دیا اور بچے کا دماغی توازن بگڑ گیا اور اس کے بعد بچہ وفات پا گیا۔بچے کے والد نے بتایا کہ بچے کو یرقان تھا جس کی وجہ سے ڈاخٹرز نے اسے خون لگایا لیکن غلط خون لگنے اور اوورڈوز ہونے کی وجہ سے بچے کی حالت خراب ہو گئی اور پھر وہ جاں بحق ہو گیا۔ کراچی میں ایسے واقعات اکثر دیکھنے میں آتے ہیں جہاں ڈاکٹرز

کی غفلت یا جعلی ڈاکٹروں کے ہاتھوں معصوم جانوں کو قتل کر دیا جاتا ہے ، چند روز پہلے بھی کراچی میں ہی 9ماہ کی ننھی نشوا کو دارالصحت ہسپتال میں غلط انجیکشن لگا دیا گیا تھا جس کی وجہ سے اس کا دماغ مفلوج ہو گیا تھا اور چند دن بعد اسکی موت واقعہ ہو گئی تھی۔اتوار کی صبح ہی گلشن اقبالڈی13کے عدنان کلینک میں یہ واقعہ پیش آیا ہے جہاں جعلی ڈاکٹر نے 8سالہ بچی کو غلط انجیکشن لگا کر موت کی نیند سلا دیا اور اب سرکاری ہسپتال نے بھی بچی کا پوسٹ مارٹم کرنے سے انکار کر دیا اور اب ملیر سے خبر آئی ہے کہ ایک 3سالہ بچے کو یرقان میں مبتلا ہونے کی وجہ سے نجی ہسپتال میں لایا گیا جہاں ڈاکٹرز نے بچے کو غلط گروپ کا خون لگا دیا جس سے بچے کی حالت خراب ہونا شروع ہو گئی اور پھر وہ وفات پا گیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *