تازہ ترین
ہوم / اہم خبریں / ڈالر 185روپےکا۔۔۔ملکی معیشت کیلئے تشویشناک خبر!

ڈالر 185روپےکا۔۔۔ملکی معیشت کیلئے تشویشناک خبر!

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) رہنما مسلم لیگ ن اور سابق وزیر خارجہ خواجہ آصف نے پیشنگوئی کی ہے کہ ڈالر 185روپے تک جائے گا۔ انہوں نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ ڈالر 185روپے تک جاتا دکھائی دے رہا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ بجٹ عوام دشمن ہے اس لیے یہ کاروبار اور معیشت کے لیے مثبت ثابت نہیں ہو گا۔ سابق وزیر خارجہ نے کہا کہ ہماری پارٹی بجٹ میں بھرپور حصہ لے رہی ہے لیکن بجٹ عوام دشمن ہے۔خواجہ آص نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ اس حکومت سے 4ہزار ارب کا ٹیکس بھی اکٹھا نہیں ہوا تھا یہ حکومت 55سو ارب کا ٹیکس کیسے اکٹھا کرے گی؟ انہوں نے دوسری جماعتوں سے پاکستان تحریکِ انصاف میں آنے والوں اور شبز زیدی پر تنقید

کرتے ہوئے کہا کہ مشرف دور میں بھی ایسے افراد آئے تھے جو پھر واپس چلے گئے۔انہوں نے کہا کہ حکومت کام نہیں کر پارہی، اللہ کرے میرا تجزیہ غلط ہو لیکن حکومت ناکام ہوتی دکھائی دے رہی ہے۔سابق وزیر خارجہ خواجہ آصف نے پیشنگوئی کی ہے کہ ڈالر 185روپے تک جائے گا۔ واضح رہے کہ انٹربینک میں ڈالر 20 پیسے مہنگا، 157 روپے کی سطح تک پہنچ گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق ڈالر کی پیش قدمی جاری ہے۔ رواں ہفتے میں ڈالر کی قدر میں مزید اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔ رنسی مارکیٹ میں بدھ کو کاروبار کے دوران امریکی کرنسی کے ریٹ میں ایک مرتبہ پھر اضافہ دیکھنے میں آیا جس کے بعد ڈالر 157روپے تک پہنچ گیا ہے۔انٹربینک مارکیٹ میں ڈالر 20 پیسے مہنگا ہوا جس کے بعد اس کی قیمت 157 روپے تک پہنچ گئی۔ جبکہ اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی قدر میں 25 پیسے اضافہ ہوا اور 157 کے ریٹ پر ہی فروخت ہوتا رہا۔ تجزیہ کاروں کے مطابق ڈالرکی قیمت آنے والے دنوں میں مزید اضافہ ہونے کا خدشہ برقرار ہے اور خواجہ آصف نے بھی پیشنگوئی کی ہے کہ ڈالر 185روپے تک جائے گا۔خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ حکومت خواہش ظاہر کرتی ہے کہ ہم پستی کی گہرائیوں سے اوپر جائیں گے، ایسے تجربات سے معاشی حالات بہتر ہوتے نظر نہیں آ رہے،اللہ کرے میرا تجزیہ غلط ثابت ہو لیکن حکومت ناکام دکھائی دے رہی ہے۔ ڈالر 185 روپے کی سطح پر جاتا دکھائی دے رہا ہے۔ حکومت معیشت کو بہتر کرنے کے لئے باہر سے ڈاکٹر منگوانے کی بجائے ملک میں موجود افراد سے رائے لے۔ پرویز مشرف کے دور حکومت میں بھی ایسے افراد آئے تھے جو پھر واپس چلے جاتے ہیں۔رہنما مسلم لیگ (ن) کا کہنا تھا کہ زیرو ریٹڈ ٹیکس کے خاتمے سے ہمارا کاروبار بری طرح متاثر اور ہمارے صنعتکاروں کے لیے بہت بڑا دھچکا ہوگا،

ہمارے ایکسپورٹرز کے اربوں روپے آج بھی حکومت کے پاس پھنسے ہوئے ہیں۔خواجہ آصف نے کہا کہ معیشت پر تمام سیاسی قوتوں کو ایک پیج پر ہونا چاہیے، معیشت پرمحاذ آرائی نہیں ہونی چاہیے، بجٹ پر حکومت اوراپوزیشن میں شدید اختلافات ہیں، جب تک یہ ماحول ٹھیک نہیں ہوگا تب تک میثاق معیشت پر بات نہیں ہو سکتی، ہم معیشت کے قتل میں شامل نہیں ہوں گے، حکومت بات کرناچاہتی ہے تو بجٹ پراپوزیشن کی تجاویز پرعمل کرے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *