ہوم / پاکستان / کرپشن کے بے بنیاد الزامات سے عوام کا پیٹ نہیں بھرا جا سکتا،ڈیلی میل کی خبر پر ریحام خان کی وزیراعظم عمران خان پر شدید تنقید

کرپشن کے بے بنیاد الزامات سے عوام کا پیٹ نہیں بھرا جا سکتا،ڈیلی میل کی خبر پر ریحام خان کی وزیراعظم عمران خان پر شدید تنقید

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) وزیراعظم عمران خان کی سابقہ اہلیہ ریحام خان نے کہا ہے کہ اپوزیشن پربھونڈے الزامات سے سلیکٹڈ وزیراعظم کے رتبے میں اضافہ نہیں ہوگا، حکوت کو اپنی الزام تراشیوں کی مہم ختم کرنی چاہیے، کرپشن کے بے بنیاد الزامات سے عوام کا پیٹ نہیں بھرا جا سکتا۔ انہوں نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے بیان میں کہا کہ حکوت کو اپنی الزام تراشیوں کی مہم ختم کرنی چاہیے ۔شاہد خاقان عباسی کے سفری اخراجات یا شہباز شریف کی ڈی ایف آئی ڈی فنڈ میں کرپشن کے بے بنیاد الزامات پاکستانی عوام کا پیٹ نہیں بھر سکتے اور نہ ہی اپوزیشن پر ایسے بھونڈے الزامات لگانے سے سلیکٹڈ وزیراعظم کے

رتبے میں کوئی اضافہ ہو گا۔واضح رہے برطانوی اخبار ڈیلی میل کے انکشاف نے شہباز شریف اور ان کے اہل خانہ پر الزام عائد کیا ہے کہ برطانیہ کی جانب سے دی گئی 500 ملین پائونڈز کی امداد میں سے لاکھوں پاؤنڈز کی کرپشن اور خرد برد کی گئی، شہباز شریف اور ان کے خاندان نے برطانیہ کی جانب سے ملنے والی امداد میں خردبرد کر کے لاکھوں پاؤنڈز منی لانڈرنگ کے ذریعے برطانیہ منتقل کئے ہیں، شریف خاندان پہلے ہی کرپشن اور منی لانڈرنگ کے الزامات کا سامنا کر رہا ہے۔ دریں اثناں مسلم لیگ ن نے جھوٹی خبر کی شائع کرنے پرڈیلی میل کیخلاف قانونی چارہ جوئی کا فیصلہ کرلیا ہے۔ صدر ن لیگ شہبازشریف نے ٹویٹر پر اپنے ردعمل میں کہا کہ ڈیلی میل کے خلاف قانونی چارہ جوئی کا فیصلہ کیا ہے۔ خود ساختہ اور گمراہ کن خبر عمران خان اور شہزاد اکبر کے ایما پر چھاپی گئی۔ ہم ان دونوں حضرات کی خلاف بھی قانونی چارہ جوئی کریں گے۔ویسے، عمران خان صاحب آپ کو ابھی میری جانب سے کیے گئے 3 ہتک عزت کے دعوں کا جواب بھی دینا ہے! ترجمان ن لیگ مریم اورنگزیب نے اپنے بیان میں کہا کہ بے بنیاد خبر سے ساکھ کونقصان پہنچایا گیا، پگڑیاں اچھالنے والوں کوقانون کے کٹہرے میں جواب دینا ہوگا۔ جھوٹی خبر دینے پر برطانوی اخبارکے خلاف قانونی کارروائی کا فیصلہ کیا ہے۔ اسی طرح مریم اورنگزیب نے اخبار کی خبر میں ذکر کردہ 2005ء سے 2012ء کی مدت پراہم سوال اٹھا دیا ہے۔انہوں نے کہا کہ 2005ء سے2007ء تک شہبازشریف ملک بدر تھے۔ اس دوران پرویزمشرف کی حکومت تھی۔ 2008ء میں شہبازشریف وزیراعلیٰ پنجاب بنے، وفاق میں پیپلزپارٹی کی حکومت تھی۔ ایرا وفاق کے ماتحت تھا۔ زلزلہ کشمیراور کےپی میں آیا تو پیسے پنجاب میں شہبازشریف کیسے کھا رہا تھا؟ دوسری جانب وزیراعظم کی معاون خصوصی فردوس عاشق اعوان نے اپنے ٹویٹ میں کہا کہ برطانوی صحافی نے سسلین مافیا کے دعوؤں کومسترد کردیا۔ برطانوی صحافی بکاؤ مال نہیں جو ن لیگ کی جھوٹی خبروں کا دفاع کرے گا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *