ہوم / کالم و مضامین / خان کی حکومت اور کلچرل فیسٹیول مسقط ۔۔۔ تحریر: فرحت عباس شاہ

خان کی حکومت اور کلچرل فیسٹیول مسقط ۔۔۔ تحریر: فرحت عباس شاہ

برس ہا برس پہلے کی بات ہے عطاء الحق قاسمی کے گھر جانا ہوا ۔ اس وقت موصوف پڑھاتے تھے ۔ اردو کے کثیرالجہت ناول نگار علی نواز شاہ بھی میرے ساتھ تھے ۔ عطاء الحق قاسمی نے پہلی بات ہی یہ کی کہ یار کوئی تھیسز لکھنے والا تلاش کردو جو مجھے پی ایچ ڈی کا تھیسز لکھ کے دے ۔ کہنے لگے ، مجھے ڈگری شگری یا علم سے کوئی غرض نہیں لیکن اب اگر کسی پروفیسر نے پی ایچ ڈی کی ہو تو اس کی تنخواہ میں پندرہ سو روپئے کا اضافہ ہوجاتا ہے ۔ ان کی بات سن کے مجھے حیرت ہوئی کہ یہ کیسا ادیب اور استادہے جو ایک طرف تو علم اور ڈگری کو بے وقعت کر رہا ہے اور دوسرا پندرہ سو ماہانہ کے لیے فراڈ کرکے ڈگری حاصل کرنا چاہتا ہے لیکن پھر اس کے بعد ان کا ایک سے ایک کارنامہ سامنے آنے لگا۔

موصوف ہمیشہ کہا کرتے ہیں کہ انسان بنیادی طور پر کمینہ ہے اور ضمیر صرف لوگوں کا نام ہوتا ہے ۔ یہ تین لوگوں کا گینگ تھا جنہوں نے اخبار اور ٹی وی کا سہارا لیکر ادب اور صحافت کے نام پر پوری دنیاء میں غیر اخلاقی دھندا شروع کیا ۔ ان میں سے ایک صاحب اللہ کو پیارے ہوگئے اور آج ان کا نام تک کوئی نہیں لیتا اور باقی امجد اور عطاء نامی جڑواں دونمریوں نے ہر طرف کہرام برپا کیا ہوا ہے ۔ تڑپنا جھپٹنا جھپٹ کر تڑپنا ۔۔۔ہوس گرم رکھنے کا ہے اک بہانہ ۔۔سنا ہے امجد اسلام امجد کے کارنامے بھی سامنے لائے جانے کی تیاری کی جارہی ہے ۔عطاء الحق قاسمی عدالتوں سے رسواء ہونے کے بعد اپنی جعلی ساکھ تو شاید بحال نہ کرسکیں لیکن بقول خالد اقبال یاسر وہ اپنی غیر قانونی و غیر اخلاقی ہتھکنڈوں اور کرپشن سے کمائی ہوئی بلیک منی کو وائٹ منی بنانے میں اتنے گھلے جا رہے ہیں کہ موصوف نے پہلی مرتبہ اپنے کھیسے سے خرچ کرنا شروع کردیا ہے ۔ عمران خان کی حکومت میں پاکستان میں رہ کر تو یہ کام ممکن نہیںرہا اس لیے انہوں نے اپنے قربانی کے بکرے قمر ریاض کو استعمال کرتے ہوے مسقط میں کلچرل فیسٹیول کروایا ہے جس میں نواز شریف سے پیسے پکڑ کے ہمیشہ عمران خان اور پاک افواج کے خلاف پراپیگنڈا کرنے والے نمایاں ہیں ۔ اس میں توجہ طلب بات یہ بھی ہے کہ انہوں نے مسقط میں پاکستانی سفارت خانے کو استعمال کیا ہے جس پر مسقط میں مقیم پاکستانی اور خاص طور پر پی ٹی آئی کے ووٹرزبہت سیخ پا ہیں ۔ پاکستان کی اعلی ترین عدالت کے ہاتھوں ذلیل ہونے والے ایک کرپٹ اور جعلی انسان کے ساتھ مسقط میں تعینات سفیر محترم کو کس نے انگیج کیا ہے اور اس کلچرل فیسٹیول کے پیچھے کیا مقاصد کارفرما ہیں یہ بات تو تحقیقات سے ہی سامنے آسکتی ہے لیکن اتنا ضرور نظر آ رہا کہ دال میں کچھ کالا ضرور ہے ۔ یہ تو اب طے ہے خطا کھائے گا ۔۔جو بھی اب مال عطاء کھائے گا ۔۔۔جانے کیا ہوگا قمر ریاض ، تجھے۔۔ نیب سے کون بچا پائے گا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *