ہوم / علاقائی / ن لیگی رکن اسمبلی زیادتی کیس کا ڈراپ سین، 24سالہ طالبہ کا واقعہ سے انکار،عدالت میں ایسا بیان ریکارڈ کروادیا کہ سارا معاملہ ہی ختم ہوگیا

ن لیگی رکن اسمبلی زیادتی کیس کا ڈراپ سین، 24سالہ طالبہ کا واقعہ سے انکار،عدالت میں ایسا بیان ریکارڈ کروادیا کہ سارا معاملہ ہی ختم ہوگیا

ملتان (نیوز ڈیسک)مسلم لیگ ن کے ایم پی اے حاجی عطا الرحمان کے خلاف 24 سالہ طالبہ کے ساتھ زیادتی کے معاملے کا ڈراپ سین ہوگیا میڈیا رپورٹس میں اس حوالے سے بتایا جارہا ہے کہ متاثرہ طالبہ نے علاقہ مجسٹریٹ کتب کو دی گئی درخواست کے مندرجات کے برعکس مقدمے کو کہانی قرار دیتے ہوئے واقعہ اور ویڈیو سے لاعلمی کا بیان دیا ہے۔طالبہ کے علاقہ مجسٹریٹ کی عدالت میں 164 کے تحت ریکارڈ کرائے گئے بیان کی عدالت سے تصدیق شدہ نقول کے مطابق پولیس تھانہ بی زیڈ کی جانب سے متاثرہ طالبہ کو بیان کے لیے پیش کیا گیا تو اس نے بیان دیا کہ وہ آپ بالغ ہے اور اپنی مرضی سے بیان ریکارڈ کروانا چاہتی

ہے۔اس کے ساتھ کسی نے زیادتی نہیں کی اور وہ کسی کیخلاف کارروائی نہیں کرنا چاہتی۔طالبہ نے مزید کہا کہ اسے کسی بھی ویڈیو کا علم نہیں ہے۔متاثرہ طالبہ نے ایف آئی آر کو بھی ایک کہانی قرار دے دیا۔طالبہ نے کہا کہ میں اپنی والدہ اور بھائیوں کے ساتھ گھر جانا چاہتی ہوں ہو۔جبکہ دوسری جانب نے ایس ایچ او بی زیڈ ظہیر بابر نے کہا ہے کہ طالبہ کے بیان کے بعد مقدمے کی کارروائی میں کوئی قانونی اثر باقی نہیں رہا اس کو پیش کی جائے گی۔جبکہ قانونی حلقوں نے طالبہ کے بیان کو ایم پی اے عطاءالرحمن کے حق میں قرار دے دیا ہے۔خیال رہے ن لیگی ایم پی اے حاجی عطاء الرحمان پر یونیورسٹی میں طالبہ سے مبینہ طور پر زیادتی کا الزام عائد کیا گیا تھا۔عطاءالرحمان پرطالبہ سے11 مہینے زیادتی اورویڈیو بنانے کا الزام ہے۔ سی پی اوملتان زبیردریشک کا کہنا ہے کہ پولیس نے عطاءالرحمان کے خلاف تھانہ بی زیڈ یومیں مقدمہ درج کرلیا۔ پولیس کے مطابق متاثرہ لڑکی ایک ہفتے غائب رہنے کے بعد لاہورسے بازیاب کروائی گئی۔پولیس نے متاثرہ لڑکی کو تحویل میں لے لیا تھا۔ مسلم لیگ ن کے رہنما اور رکن صوبائی اسمبلی حاجی عطاء الرحمان پر الزام عائد ہے کہ انہوں نے اپنی ہی یونیورسٹی کی طالبہ کو تقریباً ایک سال تک زیادتی کا نشانہ بنایا اور اسے دھمکیاں دیں کہ اگر بات نہ مانی تو وہ اس کی ویڈیو سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کر دیں گے۔۔ متاثرہ لڑکی ملتان میں نیشنل کالج آف بزنس ایڈمنسٹریشن اینڈ اکنامکس میں ایم ایس سی ایس کی فرسٹ ائیر کی طالبہ ہے۔متاثرہ لڑکی دراصل لاہور کی رہائشی ہے جو تعلیم کے لیے گذشتہ ایک سال سے ملتان میں مقیم ہے اور مقامی طور پر ایک این جی او پاکستان ہیومن ڈیویلپمنٹ فاؤنڈیشن بھی چلاتی ہے۔ گیارہ ماہ قبل رکن صوبائی اسمبلی کام کرنے کا جھانسہ دے کر اُسے نامعلوم مقام پر لے گئے جہاں اسے زیادتی کا نشانہ بنایا۔ اور دھمکایا بھی کہ اگر اس حوالے سے کچھ بھی بولا تو یہ متاثرہ لڑکی کی ویڈیو وائرل کر دی جائے گی۔ جس کے بعد متاثرہ لڑکی کو بارہا جنسی تعلق بنانے پر مجبور کیا گیا تھا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *