ہوم / پاکستان / کشمیری سوال کررہے ہیں کہ پاکستان ہمارے لیے کیا کررہا ہے،وزیر اعظم امریکہ سے دوستی کی بات کرتے ہیں تو اب ان سے ثالثی مانگیں، شیری رحمن

کشمیری سوال کررہے ہیں کہ پاکستان ہمارے لیے کیا کررہا ہے،وزیر اعظم امریکہ سے دوستی کی بات کرتے ہیں تو اب ان سے ثالثی مانگیں، شیری رحمن

اسلام آباد (نیوز ڈیسک)پاکستان پیپلز پارٹی کی نائب صدر سینیٹر شیری رحمن نے کہا ہے کہ بھارتی اقدامات کے بعد حکومت ابھی تک گومگو کی کیفیت میں ہے، سو چ رہی ہے کیا کیا جائی ،وزیر اعظم امریکہ سے دوستی کی بات کرتے ہیں تو اب ان سے ثالثی مانگیں،کشمیر کے لوگ اور قیادت سوال کر رہے پاکستان ہمارے لئے کیا کر رہاہے،پیپلز پارٹی کشمیریوں کیساتھ کھڑی ہے،بلاول بھٹو زرداری عید نماز مظفرآباد میں پڑھیں گے ،وزیر خارجہ چار دن بعد چین گئے،حکومت روایتی سفارتکاری میں پھنسی ہوئی ہے۔کشمیر کے معاملے پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے نائب صدر پیپلز پارٹی سینیٹر شیری رحمان نے کہا کہ بھارتی اقدامات پر حکومت ابھی تک گومگو کی کیفیت میں ہے۔انہوں نے کہا کہ وزیر خارجہ چار دن بعد

چین گئے ہیں،وزیر اعظم امریکہ سے دوستی کی بات کرتے ہیں تو اب ان سے ثالثی مانگیں۔ انہوں نے کہا کہ بھارت نے متنازع حصے کو ضم کرنے کی کوشش کی ہے جبکہ حکومت ابھی تک سوچ رہی ہے کیا کیا جائی ،حکومت نے چار دن بعد سفیروں کو بریفنگ دی۔انہوں نے کہا کہ نیویارک میں ہمارا دفتر کیا کر رہا تھا ،کشمیر کے لوگ اور قیادت سوال کر رہے پاکستان ہمارے لئے کیا کر رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی کشمیریوں کے ساتھ کھڑی ہے،چیئرمین بلاول بھٹو زرداری عید نماز مظفرآباد میں پڑھیں گے۔ انہوں نے کہاکہ پورا کشمیر نشانے پر ہے،حکومت او آئی سی کا ہنگامی اجلاس بلائے،یہ ڈیڑھ دو دن کا اجلاس بلا کر گھر چلے گئے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ اقوامی متحدہ کی انسانی حقوق کی کونسل کو بلایا جائے، مقبوضہ ویلی میں ریڈ کراس کو بھیجا جائے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت ابھی تک روایتی سفارتکاری میں پھنسی ہوئی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *