ہوم / پاکستان / کشمیر کی نازک صورتحال پر عمران خان کے جس بیان پر (ن) لیگ پراپیگنڈہ کررہی ہے اسکی حقیقت کیا ہے، وزیراعظم نے دراصل کیا بات کہی تھی سنیے انہی کی زبانی۔۔!ویڈیو لنک میں

کشمیر کی نازک صورتحال پر عمران خان کے جس بیان پر (ن) لیگ پراپیگنڈہ کررہی ہے اسکی حقیقت کیا ہے، وزیراعظم نے دراصل کیا بات کہی تھی سنیے انہی کی زبانی۔۔!ویڈیو لنک میں

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) مسئلہ کشمیر کے حوالے سے سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والے ایک اخباری تراشے اور افواہوں کی حقیقت سامنے آ گئی ۔ تفصیلات کے مطابق کشمیر کاز کو نقصان پہنچانے کیلئے سوشل میڈیا پر وائرل اخباری تراشے جس میں ’’کشمیر کا بہترین حل 3حصوں میں تقسیم‘‘ کو عمران خان سے منسوب کیا گیا ہے اس کی حقیقت منظر عام پر آ گئی ہے۔ تفصیل کے مطابق نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے اینکر پرسن فیصل اظفر علوی نے کہا ہے کہ وہ ساڑھے تین سال قبل12 فروری 2016 کو عمران خان سے بنی گالہ میں ہونے والی کالم نویسوں اور صحافیوں کی ملاقات میں موجود تھے

جس میں عمران خان سے بحیثیت پارٹی چیئرمین ہونے والی گفتگو کواگلے روز ایک ریاستی اخبار نے تروڑ مروڑ کر پیش کیا تھااور لکھا تھا کہ عمران خان نے کشمیر کا بہترین حل کشمیر کی تین حصوں میں تقسیم کو قرار دیا ہے ۔ فیصل اظفر علوی کا کہنا تھا کہ اُس وقت رپورٹ کیے جا نےکی غرض سے انہوں نے عمران خان کی گفتگو کو ریکارڈ کیا تھا اور تمام گفتگو پر مبنی ریکارڈنگ جو کہ تقریبا 47 منٹ کی ہےاس میں مسئلہ کشمیر پر بھی بات کی گئی تھی۔ اینکر پرسن نے پروگرام کے دوران عمران خان کی مسئلہ کشمیر پر ریکارڈ شدہ گفتگو بھی سنائی ہے جس میں عمران خان کشمیر کا حل حق خود ارادیت اور خود مختار کشمیر کو قرار دے رہے ہیں۔ اینکر پرسن فیصل اظفر علوی کا اس حوالے سے مزید کہنا تھا کہ عمران خان سے منسوب شدہ بیان کی تردید اگلے ہی روز نعیم الحق نے بھی کر دی تھی تاہم ایسے نازک موڑ پر جب مسئلہ کشمیر اقوام عالم کے سامنے ایک حل طلب مسئلے کے طور پر ابھر کر آیا ہے تو کشمیر کاز کو نقصان پہنچانے کیلئے وزیر اعظم پاکستان عمران خان سے منسوب اُس اخباری تراشے کو ایک مذموم سازش کے طور پر پھیلایا جا رہا ہے اور انڈین میڈیا بھی اسی اخباری تراشے کو بنیاد بنا کر پروپیگنڈا کر رہا ہے کہ پاکستان نے بھارتی بیانیہ تسلیم کر لیا ہے۔ پروگرام میں شامل نوجوان کشمیری صحافی اصغر حیات کا بھی اس حوالے سے کہنا تھا کہ وہ بھی اس ملاقات میں شریک تھے ، عمران خان نے کشمیر کی تین حصوں میں تقسیم پر بات کی ہی نہیں تھی اور کشمیر کا حل خود مختار کشمیر کو قرار دیا تھا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *