تازہ ترین
ہوم / پاکستان / نوجوان بغیر تھرڈ گارنٹی کے براہ راست بینکوں سے قرض لے سکیں گے

نوجوان بغیر تھرڈ گارنٹی کے براہ راست بینکوں سے قرض لے سکیں گے

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ کامیاب جوان پروگرام سے بےروزگاری کا خاتمہ ممکن ہوگا، قرضوں سے چھوٹے اوردرمیانے درجے کی صنعتوں کو فروغ ملے گا، ڈیڑھ لاکھ نوجوانوں کو100ارب روپے تک کے قرضے دیے جائیں گے،پہلےمرحلے میں 5 لاکھ، دوسرے مرحلے میں5 سے 50 لاکھ تک کے قرضے دیے جائیں گے،نوجوان بغیر تھرڈ گارنٹی براہ راست بینکوں سے قرض لے سکیں گے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیرِاعظم عمران خان کی زیرصدارت کامیاب جوان پروگرام سے متعلق جائزہ اجلاس ہوا۔ اجلاس میں معاون خصوصی برائے امور نوجوانان عثمان ڈار،معاون خصوصی نعیم الحق، قائم مقام

گورنراسٹیٹ بینک، صدر نیشنل بینک، صدر بینک آف خیبر، صدر بینک آف پنجاب، چیئرمین نادرا، چیئرمین این ٹی سی اور دیگر حکام شریک ہوئے۔معاون خصوصی عثمان ڈار نے وزیراعظم کو کامیاب جوان پروگرام پر بریفنگ دی۔عثمان ڈار نے بتایا کہ کامیاب جوان پروگرام کا باقاعدہ اجراء ستمبر سے کیا جا رہا ہے۔کامیاب جوان پروگرام کے تحت ایک مخصوص پورٹل کا قیام عمل میں لایا جا رہا ہے۔ کامیاب جوان پروگرام کے تحت قرض کی فراہمی کیلئے 2 درجے بنائے گئے ہیں۔ ماضی میں نوجوانوں کو کاروبار کیلئے قرض فراہم کرنے کا دائرہ کار نہایت محدود تھا۔ عثمان ڈار نے اجلاس کو بتایا کہ حکومت کے 5 سالوں میں 100ارب روپے تک کے قرضے تقریباً ڈیڑھ لاکھ نوجوانوں کو دیے جائیں گے۔وزیراعظم عمران خان کو بریفنگ میں مزید بتایا گیا کہ کامیاب جوان پروگرام میں قرض حصول کیلئے کسی تیسرے فرد کی گارنٹی کی شرط نہیں ہوگی۔ پہلی درجہ بندی میں نوجوانوں کو ایک سے 5 لاکھ روپے تک کے قرضے دیے جائیں گے۔ دوسری سطح پر 5 سے 50 لاکھ تک کے قرضے دیے جائیں گے۔ اسی طرح نوجوان براہ راست پورٹل کے ذریعے بینکوں سے قرض حاصل کر سکیں گے۔ پہلے مرحلے میں نیشنل بینک، بینک آف خیبر اوربینک آف پنجاب قرض دیں گے۔وزیراعظم کوبتایا گیا کہ نوجوان پروگرام میں چھوٹے اوردرمیانے درجے کی صنعتوں کے فروغ پرخصوصی توجہ دی جارہی ہے۔ اس موقع پر وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ کامیاب جوان پروگرام نوجوانوں کو روزگار کی فراہمی میں مددگار ثابت ہوگا۔ پروگرام چھوٹی اور درمیانے درجے کی صنعتوں کی ترقی کے فروغ کا باعث بنے گا۔ کامیاب جوان پروگرام کا باقاعدہ آغاز وزیر اعظم ستمبر کے پہلے ہفتے میں کریں گے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *