ہوم / علاقائی / میڈیکل طالبہ کو قتل کرنے والاملزم 111 افراد کا قاتل نکلا

میڈیکل طالبہ کو قتل کرنے والاملزم 111 افراد کا قاتل نکلا

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک)پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے 111 افراد کے قتل میں ملوث ٹارگٹ کلر کو گرفتار کرلیا ہے جبکہ طالبہ مصباح کے قتل میں ملوث ملزم بھی قانون کی گرفت میں آگیا ہے۔کراچی میں ایس ایس پی ایسٹ غلام اظفر مہیسر نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ ایم کیو ایم لندن کے ٹارگٹ کلر کو گرفتار کیا ہے جو 111 قتل کی وارداتوں میں ملوث ہے، ملزم سرکاری عباسی شہید اسپتال میں ملازم تھا، اس کا نیٹ ورک بھی بے نقاب ہوگیا ہے جس میں بہت سے ملزمان شامل ہیں جن کی گرفتاری کے لیے چھاپے مار رہے ہیں، اس گروہ کے خلاف 57 مقدمات اب تک سامنے آچکے ہیں۔ایس ایس پی ایسٹ غلام اظفر مہیسر نے کہا

کہ گرفتار ملزم سانحہ 12 مئی میں بھی ملوث ہے، کچھ عرصہ قبل اس نے اپنا حلیہ تبدیل کرلیا اور تبلیغ پر چلا گیا تھا۔ایس ایس پی ایسٹ کا کہنا تھا کہ ڈکیتی میں مزاحمت پر قتل ہونے والی طالبہ مصباح کے قتل میں ملوث ایک ملزم کو گرفتار کرلیا ہے، اس واقعے میں کچرا چننے والے افغانی جرائم پیشہ ملوث ہیں۔پولیس نے بتایا کہ گرفتار ملزم نے اپنے ساتھی بشیر افغانی سمیت واردات کی تھی، واردات کے دوران چھینا گیا موبائل فون بھی برآمد کرلیا گیا ہے اور مفرور ملزم کے ساتھی کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارے جارہے ہیں، یہ افغانی گینگ ہے جس نے کچرا چننے سے اپنا کام شروع کیا اور ڈکیتیاں شروع کردیں، کراچی میں کچراچننے والے افغانی ریکی کرکے وارداتیں کرتےہیں۔ملزم سے متعلق مزید بتایا گیا ہے کہ اس کا گروہ 22 افراد پر مشتمل ہے۔ملزم عبداسلام نے رہائی کے بعد عباسی شہید اسپتال میں نوکری کی۔پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم نے 111 قتل کرنے کا اعتراف کیا۔ملزم 5 لڑکیوں کو زیادتی کے بعد قتل کر چکا ہے۔ملزم نے مخبری کے شبے میں 57 لوگوں کو قتل کیا۔ملزم 3 بار گرفتار ہو کر پیرول پر رہا ہو چکا ہے۔پولیس سے بچنے کے لیے ملزم مذہبی جماعت میں شامل ہو گیا تھا۔ملزم نے کچھ عرصہ قبل اپنا حلیہ تبدیل کر کے تبلیغ پر چلا گیا تھا۔ ۔ملزم 12 مئی 2007ء کے واقعے میں بھی ملوث تھا۔ واضح رہے کہ مصباح اطہر ہمدرد یونیورسٹی میں تھرڈ ائیر کی طالبہ تھی، وہ گزشتہ جمعرات کی صبح 7بجکر 5 منٹ پر اپنے والد کیساتھ گھر سے کار میں بیٹھ کر اسٹاپ پر یونیورسٹی کے پوائنٹ کے انتظار میں تھی کہ اس دوران موٹر سائیکل پر سوار مسلح ملزمان آئے اور اس کے والد سے لوٹ مار کی اور دوران فائرنگ کردی جس کے نتیجے میں گولی مصباح کی آنکھ کے قریب لگی تھی، جس کے نتیجے میں مصباح شدید زخمی ہوئی تھی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *