ہوم / علاقائی / افغان سفیر نےپشاور میں موجود مارکیٹ کو افغانستان کی ملکیت قرار دے کر افغان پرچم لہرا دیا

افغان سفیر نےپشاور میں موجود مارکیٹ کو افغانستان کی ملکیت قرار دے کر افغان پرچم لہرا دیا

پشاور(مانیٹرنگ ڈیسک) پشاور میں افغانستان کا پرچم لہرا دیا گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق افغان سفیر شکراللہ عاطف مشعال نے پشاور میں موجود افغان مارکیٹ کو افغانستان کی ملکیت قرار دے کر افغان پرچم لہرا دیا۔ اس حوالے سے ایک ویڈیو بھی سامنے آئی ہے جس میں افغان سفیر شکراللہ عاطف مشعال پشاور کی افغان مارکیٹ میں افغانستان کا پرچم نصب کر رہے ہیں۔ اس وقت بھی یہ پرچم پاکستان کی سرزمین پر نصب ہے جو کہ آئینِ پاکستان کی خلاف ورزی ہے۔ شہریوں نے اس کے خلاف احتجاج کیا ہے کہ پاکستان کی سرزمین پر افغان سفیر کیسے افغانستان کا پرچم لہرا سکتا ہے۔ قانون کے مطابق کسی اور ملک کا پرچم صرف سفارت خانے پہ لہرایا جا سکتا ہے اس کے علاوہ کسی عمارت پر کسی دوسرے ملک کا پرچم نہیں لہرایا جا سکتا۔دوسری جانب افغانستان کی طرف سے طورخم بارڈر 24گھنٹے کھلا رکھنے کی راہ میں رکاوٹیں

ڈال دی گئی ہیں،وزیراعظم عمران خان کے افتتاح کے باوجود افغان بارڈر 24 گھنٹے آپریشنل نہیں کیا جا سکا ہے، افغان گمرک(کسٹم) نے 24 گھنٹے بارڈر کھولنے سے انکار کر دیا ہے۔ ذرائع کے مطابق افغان گمرک کے مطابق سہولیات اور عملہ نہ ہونے کی وجہ سے بارڈر کھلا نہیں رکھ سکتے،معمول کے مطابق طورخم بارڈر صبح نو بجے کھولے گا اور شام سات بجے بند ہوگا۔کسٹم کلیئرنس ایجنٹس طورخم ذرائع کے مطابق کلیئرنس اور گیٹ پاس کے باوجود روزانہ تین سو گاڑیاں سرحد پار نہیں کرسکتے، افغان الیکشن نتائج نہ آنے تک گاڑیوں کی آمد رفت مزید کم ہوسکتی ہے۔ طور خم ذرائع نے بتایا کہ تجارت میں 30 فیصد کمی واقع ہوئی ہے۔ خیال رہے کہ چند روز قبل خود وزیراعظم عمران خان نے افغان بارڈر کو چوبیس گھنٹے کھلا رکھنے کے منصوبے کا افتتاح کیا تھا لیکن تاحال بارڈر کو 24گھنٹے آپریشن نہیں کیا جاسکا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *