راحیل شریف کی قیادت میں 41 ملکی فوجی اتحاد حرکت میں آگیا، آنےوالے دنوں میں کیا ہوگا، اعلان کردیا

ریاض (نیوز ڈیسک) مقامی ذرائع کے مطابق 41 اسلامی ممالک پر مشتمل متحدہ الائنس کے دفاعی وزراء سعودی عرب کے دارالحکومت ریاض میں 26 نومبر کو دہشت گردی سے نجات پر تبادلہ خیال کرنے کے لیے ملیں گے۔ عرب ممالک میں سے ایک تہائی ممالک کو دہشت گرد گروپوں کا سامنا ہے جس سے نپٹنے کے لیے ان سب کا ایک پلیٹ فارم پر آنا نہایت ضروری ہے۔سعودی پریس ایجنسی کے مطابق اس ملاقات کا مقصد اسلامک دفاعی ممبرز کے درمیان دہشت گردی سے نپٹنے کے لیے باہمی تعاون کو فروغ دینا ہے۔ اس ملاقات میں دفاعی

وزراء کے علاوہ ان تمام ممالک کے سفیر بھی اپنے اپنے ملک کی نمائندگی کریں گے۔ اس ملاقات میں تمام وزراء اسلامی ممالک کو دوچار دہشت گردی کے مسائل پر بات کریں گے اور اس سے نپٹنے کے لیے نئی حکمت عملی پر تبادلہ خیال کریں گے ۔اسکے علاوہ پرانی حکمت عملی سے ابھی تک وہ کس حد تک اس مسائل سے نجات حاصل کر سکے ہیں اس پر بھی نظر ثانی کی جائے گی۔ سعودی پریس ایجنسی کا کہنا ہے کہ یہ ملاقات دفاعی الائنس کی ایک اصلی شروعات ہو گی ۔ مئی میں ریاض میں ہونے والے عرب ، امریکہ اور اسلامی ممالک کے مشترکہ اجلاس کی جانب سے اعلامیہ جاری کیا گیا تھا کہ اس الائنس کا حصہ تمام ممالک کی جانب سے عراق ، شام اور اسکے علاوہ جہاں بھی دہشت گرد تنظیمیں موجود ہیں کے خلاف جنگ کے لیے 34،000 فوجی تعنیات کیے جائیں گے۔ رواں سال 6 جنوری کو اس لائنس کے کمانڈر ان چیف کی نشست پاکستان کے ریٹائرڈ چیف آف آرمی سٹاف جنرل راحیل شریف کو سونپی گئی تھی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں