تازہ ترین
ہوم / پاکستان / نواز شریف نے خود کتنی پارٹیاں بدلیں اور مولانا احمد شاہ نورانی نے جب ٹکٹ دینے سے انکار کیا تو نواز شریف نے بھٹو کے کس قریبی ساتھی کی چاپلوسی شروع کردی تھی، حامد میر کے چونکا دینے والے انکشافات

نواز شریف نے خود کتنی پارٹیاں بدلیں اور مولانا احمد شاہ نورانی نے جب ٹکٹ دینے سے انکار کیا تو نواز شریف نے بھٹو کے کس قریبی ساتھی کی چاپلوسی شروع کردی تھی، حامد میر کے چونکا دینے والے انکشافات

 

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)معروف صحافی و تجزیہ کار حامد میر نے نجی ٹی وی پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے انکشاف کیا ہے کہ جلد ہی ن لیگ کے 25ایم این ایز چھوڑ کر جانے والے ہیں جبکہ ن لیگ کی قیادت کے علم میں یہ بات آئی ہے کہ تین سے چار رہنما ایسے ہیں جو ٹوٹ چکے ہیں۔ حامد میر نے مزید انکشاف کرتے ہوئے کہا کہ تین دن پہلے میری ن لیگ کے ایک وزیر سے بات ہوئی ہےاور انہوں نے

مجھے بتایا ہے کہ ہمارے 25 مزید ایم این اے جانے والے ہیں،اور ان میں سے بڑی تعداد کا تعلق مرکزی پنجاب اور شمالی پنجاب سے ہے ،حامد میر نے بتایا کہ یہ وزیر پکے ن لیگ کے ساتھ ہیں اور نواز شریف کو کبھی نہیں چھوڑیں گے۔ حامد میر نے پارٹی چھوڑ کر دیگر پارٹیوں میں شامل ہونے والوں پر ن لیگ کے اعتراضات کے حوالے سے کہا کہ رانا ثنا اللہ نے تو پارٹی چھوڑنے والوں کو تنقید کا نشانہ نہیں بنایا کیونکہ وہ خود پیپلزپارٹی چھوڑ کر ن لیگ میں شامل ہوئے تھے ، بینظیر بھٹو نے رانا ثنا اللہ کو ٹکٹ دینے سے انکار کر دیا تھا اور ان کی جگہ زاہد سرفراز کو ٹکٹ دیا جس پر ناراض ہو کر وہ مسلم لیگ ن میں آگئے۔ حامد میر نے انکشاف کرتے ہوئے بتایا کہ ن لیگ کے قائد اور بانی نواز شریف بھی کئی جماعتوں کا حصہ رہے ، نواز شریف نے سب سے پہلے جمعیت علمائے پاکستان کا ٹکٹ مانگا جس پر مولانا احمد شاہ نورانی مرحوم نے ان کو پارٹی میں شامل کرنے سے انکار کر دیا تھا۔نواز شریف پھر مصطفیٰ کھر کے آگے پیچھے گھومتے پھرتے تھے اس کے بعد یہ تحریک استقلال میں چلے گئے اور بعد میں مسلم لیگ جونیجو میں آگئے اور کچھ عرصہ بعد مسلم لیگ جونیجو چھوڑ کر اپنی مسلم لیگ ن بنا لی۔بینظیر بھٹو نے رانا ثنا اللہ کو ٹکٹ دینے سے انکار کر دیا تھا اور ان کی جگہ زاہد سرفراز کو ٹکٹ دیا جس پر ناراض ہو کر وہ مسلم لیگ ن میں آگئے۔حامد میر نے انکشاف کرتے ہوئے بتایا کہ ن لیگ کے قائد اور بانی نواز شریف بھی کئی جماعتوں کا حصہ

رہے ، نواز شریف نے سب سے پہلے جمعیت علمائے پاکستان کا ٹکٹ مانگا جس پر مولانا احمد شاہ نورانی مرحوم نے ان کو پارٹی میں شامل کرنے سے انکار کر دیا تھا۔نواز شریف پھر مصطفیٰ کھر کے آگے پیچھے گھومتے پھرتے تھے اس کے بعد یہ تحریک استقلال میں چلے گئے اور بعد میں مسلم لیگ جونیجو میں آگئے اور کچھ عرصہ بعد مسلم لیگ جونیجو چھوڑ کر اپنی مسلم لیگ ن بنا لی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *